This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
دیگر
Aisa nahi ke tere baad ahle karam nahi mile

Aisa nahi ke tere baad ahle karam nahi mile نامعلوم

Aise nahi ke tere baad

Aise nahi ke tere baad

Aitbar Sajid 16: Tarjuman Nahi Rahe

Aitbar Sajid 16: Tarjuman Nahi Rahe نامعلوم

Bhari mehfil mein tanhaai ka aalam dhoond leta hoon

Bhari mehfil mein tanhaai ka aalam dhoond leta hoon

Bhari mehfil mein tanhaaii ka aalam dhoond leta hoon

Bhari mehfil mein tanhaaii ka aalam dhoond leta hoon نامعلوم

Jo khayaal the na qayaas the

Jo khayaal the na qayaas the نامعلوم

Koi kaisa humsafar hai

Koi kaisa humsafar hai نامعلوم

Koi kaisa humsafar hai

Koi kaisa humsafar hai

Meri raaton ki raahat din ke itmenaan

Meri raaton ki raahat din ke itmenaan نامعلوم

Meri raaton ki raahat din ke itmenaan le jana

Meri raaton ki raahat din ke itmenaan le jana

Phir uske jaate hi dil sunsaan ho kar reh gaya

Phir uske jaate hi dil sunsaan ho kar reh gaya

Tum ko to ye sawan ki ghata kuchh nahi kehti

Tum ko to ye sawan ki ghata kuchh nahi kehti

Tumhain Dekh K Yaad Aata Hai Mujhay..... Kahin Pehlay Bhe Tum Sy Mila Hu Mein

Tumhain Dekh K Yaad Aata Hai Mujhay..... Kahin Pehlay Bhe Tum Sy Mila Hu Mein نامعلوم

URDU POETRY - Na Khayal thay Na Qayaas Thay(AITBAR SAJID)

URDU POETRY - Na Khayal thay Na Qayaas Thay(AITBAR SAJID)

Yun hi si ek baat thi

Yun hi si ek baat thi

Yun hi si ek baat thi

Yun hi si ek baat thi نامعلوم

بھیڑ ہے بر_سر_بازار کہیں اور چلیں

بھیڑ ہے بر_سر_بازار کہیں اور چلیں نامعلوم

پھول تھے رنگ تھے لمحوں کی صباحت ہم تھے

پھول تھے رنگ تھے لمحوں کی صباحت ہم تھے نامعلوم

تمہیں جب کبھی ملیں فرصتیں مرے دل سے بوجھ اتار دو

تمہیں جب کبھی ملیں فرصتیں مرے دل سے بوجھ اتار دو طیب نوید

تمہیں خیال_ذات ہے شعور_ذات ہی نہیں

تمہیں خیال_ذات ہے شعور_ذات ہی نہیں نامعلوم

جانے کس چاہ کے کس پیار کے گن گاتے ہو

جانے کس چاہ کے کس پیار کے گن گاتے ہو نامعلوم

چھوٹے چھوٹے سے مفادات لیے پھرتے ہیں

چھوٹے چھوٹے سے مفادات لیے پھرتے ہیں نامعلوم

چھوٹے چھوٹے کئی بے_فیض مفادات کے ساتھ

چھوٹے چھوٹے کئی بے_فیض مفادات کے ساتھ نامعلوم

رستے کا انتخاب ضروری سا ہو گیا

رستے کا انتخاب ضروری سا ہو گیا

گھر کی دہلیز سے بازار میں مت آ جانا

گھر کی دہلیز سے بازار میں مت آ جانا نامعلوم

مجھے وہ کنج_تنہائی سے آخر کب نکالے_گا

مجھے وہ کنج_تنہائی سے آخر کب نکالے_گا نامعلوم

نہ گمان موت کا ہے نہ خیال زندگی کا

نہ گمان موت کا ہے نہ خیال زندگی کا نامعلوم

یہ حسیں لوگ ہیں تو ان کی مروت پہ نہ جا

یہ حسیں لوگ ہیں تو ان کی مروت پہ نہ جا نامعلوم

یہ ٹھیک ہے کہ بہت وحشتیں بھی ٹھیک نہیں

یہ ٹھیک ہے کہ بہت وحشتیں بھی ٹھیک نہیں نامعلوم

دیگر

  • Aisa nahi ke tere baad ahle karam nahi mile

    Aisa nahi ke tere baad ahle karam nahi mile نامعلوم

  • Aise nahi ke tere baad

    Aise nahi ke tere baad

  • Aitbar Sajid 16: Tarjuman Nahi Rahe

    Aitbar Sajid 16: Tarjuman Nahi Rahe نامعلوم

  • Bhari mehfil mein tanhaai ka aalam dhoond leta hoon

    Bhari mehfil mein tanhaai ka aalam dhoond leta hoon

  • Bhari mehfil mein tanhaaii ka aalam dhoond leta hoon

    Bhari mehfil mein tanhaaii ka aalam dhoond leta hoon نامعلوم

  • Jo khayaal the na qayaas the

    Jo khayaal the na qayaas the نامعلوم

  • Koi kaisa humsafar hai

    Koi kaisa humsafar hai نامعلوم

  • Koi kaisa humsafar hai

    Koi kaisa humsafar hai

  • Meri raaton ki raahat din ke itmenaan

    Meri raaton ki raahat din ke itmenaan نامعلوم

  • Meri raaton ki raahat din ke itmenaan le jana

    Meri raaton ki raahat din ke itmenaan le jana

  • Phir uske jaate hi dil sunsaan ho kar reh gaya

    Phir uske jaate hi dil sunsaan ho kar reh gaya

  • Tum ko to ye sawan ki ghata kuchh nahi kehti

    Tum ko to ye sawan ki ghata kuchh nahi kehti

  • Tumhain Dekh K Yaad Aata Hai Mujhay..... Kahin Pehlay Bhe Tum Sy Mila Hu Mein

    Tumhain Dekh K Yaad Aata Hai Mujhay..... Kahin Pehlay Bhe Tum Sy Mila Hu Mein نامعلوم

  • URDU POETRY - Na Khayal thay Na Qayaas Thay(AITBAR SAJID)

    URDU POETRY - Na Khayal thay Na Qayaas Thay(AITBAR SAJID)

  • Yun hi si ek baat thi

    Yun hi si ek baat thi

  • Yun hi si ek baat thi

    Yun hi si ek baat thi نامعلوم

  • بھیڑ ہے بر_سر_بازار کہیں اور چلیں

    بھیڑ ہے بر_سر_بازار کہیں اور چلیں نامعلوم

  • پھول تھے رنگ تھے لمحوں کی صباحت ہم تھے

    پھول تھے رنگ تھے لمحوں کی صباحت ہم تھے نامعلوم

  • تمہیں جب کبھی ملیں فرصتیں مرے دل سے بوجھ اتار دو

    تمہیں جب کبھی ملیں فرصتیں مرے دل سے بوجھ اتار دو طیب نوید

  • تمہیں خیال_ذات ہے شعور_ذات ہی نہیں

    تمہیں خیال_ذات ہے شعور_ذات ہی نہیں نامعلوم

  • جانے کس چاہ کے کس پیار کے گن گاتے ہو

    جانے کس چاہ کے کس پیار کے گن گاتے ہو نامعلوم

  • چھوٹے چھوٹے سے مفادات لیے پھرتے ہیں

    چھوٹے چھوٹے سے مفادات لیے پھرتے ہیں نامعلوم

  • چھوٹے چھوٹے کئی بے_فیض مفادات کے ساتھ

    چھوٹے چھوٹے کئی بے_فیض مفادات کے ساتھ نامعلوم

  • رستے کا انتخاب ضروری سا ہو گیا

    رستے کا انتخاب ضروری سا ہو گیا

  • گھر کی دہلیز سے بازار میں مت آ جانا

    گھر کی دہلیز سے بازار میں مت آ جانا نامعلوم

  • مجھے وہ کنج_تنہائی سے آخر کب نکالے_گا

    مجھے وہ کنج_تنہائی سے آخر کب نکالے_گا نامعلوم

  • نہ گمان موت کا ہے نہ خیال زندگی کا

    نہ گمان موت کا ہے نہ خیال زندگی کا نامعلوم

  • یہ حسیں لوگ ہیں تو ان کی مروت پہ نہ جا

    یہ حسیں لوگ ہیں تو ان کی مروت پہ نہ جا نامعلوم

  • یہ ٹھیک ہے کہ بہت وحشتیں بھی ٹھیک نہیں

    یہ ٹھیک ہے کہ بہت وحشتیں بھی ٹھیک نہیں نامعلوم