noImage

فضل حسین صابر

1884 - 1962 | برہان پور, ہندوستان

غزل 35

اشعار 5

تو جفاؤں سے جو بدنام کئے جاتا ہے

یاد آئے گی تجھے میری وفا میرے بعد

تم نے کیوں دل میں جگہ دی ہے بتوں کو صابرؔ

تم نے کیوں کعبہ کو بت خانہ بنا رکھا ہے

شگفتہ باغ سخن ہے ہمیں سے اے صابرؔ

جہاں میں مثل نسیم بہار ہم بھی ہیں

ان کی مانند کوئی صاحب ادراک کہاں

جو فرشتے نہیں سمجھے وہ بشر سمجھے ہیں

صابرؔ ترا کلام سنیں کیوں نہ اہل فن

بندش عجب ہے اور عجب بول چال ہے

  • شیئر کیجیے

کتاب 1

کلام صابر

 

1985

 

"برہان پور" کے مزید شعرا

  • شہزاد انجم برہانی شہزاد انجم برہانی
  • نغیم اختر خادمی نغیم اختر خادمی
  • مجاز آشنا مجاز آشنا