aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
George Puech Shor's Photo'

جارج پیش شور

1823 - 1894 | میرٹھ, انڈیا

جارج پیش شور

غزل 3

 

اشعار 20

دل میں اپنے آرزو سب کچھ ہے اور پھر کچھ نہیں

دو جہاں کی جستجو سب کچھ ہے اور پھر کچھ نہیں

  • شیئر کیجیے

گزشتہ سال جو دیکھا وہ اب کی سال نہیں

زمانہ ایک سا بس ہر برس نہیں چلتا

  • شیئر کیجیے

اک نظر نے کیا ہے کام تمام

آرزو بھی تو تھی یہی دل کی

  • شیئر کیجیے

دیتے نہ دل جو تم کو تو کیوں بنتی جان پر

کچھ آپ کی خطا نہ تھی اپنا قصور تھا

اسی خیال میں دن رات میں تڑپتا ہوں

تمہیں قرار بھی دو گے جو بے قرار کیا

  • شیئر کیجیے

رباعی 8

کتاب 4

 

"میرٹھ" کے مزید شعرا

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے