Habeeb Ahmad Siddiqui's Photo'

حبیب احمد صدیقی

1908

حبیب احمد صدیقی

غزل 23

اشعار 35

میرے لئے جینے کا سہارا ہے ابھی تک

وہ عہد تمنا کہ تمہیں یاد نہ ہوگا

  • شیئر کیجیے

اظہار غم کیا تھا بہ امید التفات

کیا پوچھتے ہو کتنی ندامت ہے آج تک

  • شیئر کیجیے

ہزاروں تمناؤں کے خوں سے ہم نے

خریدی ہے اک تہمت پارسائی

  • شیئر کیجیے

مجھ کو احساس رنگ و بو نہ ہوا

یوں بھی اکثر بہار آئی ہے

  • شیئر کیجیے

وہ بھلا کیسے بتائے کہ غم ہجر ہے کیا

جس کو آغوش محبت کبھی حاصل نہ ہوا

  • شیئر کیجیے

کتاب 12

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

بولیے