معصومؔ عجب ہے حال چمن ہر شعلے کا یہاں بدلا ہے چلن

شاخوں کو جلایا جاتا ہے طائر کو ستایا جاتا ہے