noImage

میرضیا الدین ضیا

- 1781

غزل 1

 

اشعار 4

کون سے زخم کا کھلا ٹانکا

آج پھر دل میں درد ہوتا ہے

  • شیئر کیجیے

بھول کر بھی کبھی نہ یاد کیا

ہم ترے جی سے ایسے بھول گئے

  • شیئر کیجیے

جمع کر کے درد سارے تو نے پیدا دل کیا

کہہ تو اے دست قضا اس سے کیا حاصل کیا

  • شیئر کیجیے

رسوائیوں کی اپنی مجھے کچھ ہوس نہیں

ناصح پہ کیا کروں کہ مرا دل پہ بس نہیں

  • شیئر کیجیے