Muneer Niyazi's Photo'

منیر نیازی

1923 - 2006 | لاہور, پاکستان

پاکستان کے ممتاز ترین جدید شاعروں میں شامل۔ فلموں کے لئے گیت بھی لکھے

پاکستان کے ممتاز ترین جدید شاعروں میں شامل۔ فلموں کے لئے گیت بھی لکھے

غزل

بے چین بہت پھرنا گھبرائے ہوئے رہنا

آ گئی یاد شام ڈھلتے ہی

آئنہ اب جدا نہیں کرتا

اتنے خاموش بھی رہا نہ کرو

اس شہر_سنگ_دل کو جلا دینا چاہئے

اس کا نقشہ ایک بے_ترتیب افسانے کا تھا

امتحاں ہم نے دیئے اس دار_فانی میں بہت

اور ہیں کتنی منزلیں باقی

اک مسافت پاؤں شل کرتی ہوئی سی خواب میں

بے_چین بہت پھرنا گھبرائے ہوئے رہنا

تھکن سے راہ میں چلنا محال بھی ہے مجھے

تھکے لوگوں کو مجبوری میں چلتے دیکھ لیتا ہوں

تھی جس کی جستجو وہ حقیقت نہیں ملی

خیال جس کا تھا مجھے خیال میں ملا مجھے

رات اتنی جا چکی ہے اور سونا ہے ابھی

ساعت_ہجراں ہے اب کیسے جہانوں میں رہوں

سن بستیوں کا حال جو حد سے گزر گئیں

محفل_آرا تھے مگر پھر کم_نما ہوتے گئے

میری ساری زندگی کو بے_ثمر اس نے کیا

نام بے_حد تھے مگر ان کا نشاں کوئی نہ تھا

کوئی حد نہیں ہے کمال کی

ہنسی چھپا بھی گیا اور نظر ملا بھی گیا

یہ کیسا نشہ ہے میں کس عجب خمار میں ہوں

نظم

ایک لڑکی

میں اور شہر

ہمیشہ دیر کر دیتا ہوں

آخری عمر کی باتیں

آمد شب

تو

شب_خوں

صدا بصحرا

طلسمات

میں اور بادل

میں اور میرا خدا

میں اور وہ

وصال کی خواہش

ہمیشہ دیر کر دیتا ہوں

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Added to your favorites

Removed from your favorites