عاجزی آج ہے ممکن ہے نہ ہو کل مجھ میں

اس طرح عیب نکالو نہ مسلسل مجھ میں

فضا ی امن و اماں کی سدا رکھیں قائم

سنو ی فرض تمہارا بھی ہے ہمارا بھی