وہ خوش کسی کے ساتھ ہیں ناخوش کسی کے ساتھ

ہر آدمی کی بات ہے ہر آدمی کے ساتھ

بڑی ہی دھوم سے دعوت ہو پھر تو زاہد کی

یہ مے جو چار گھڑی کو حلال ہو جائے

آئے اگر قیامت تو دھجیاں اڑا دیں

پھرتے ہیں جستجو میں فتنے تری گلی کے

بعد فنا بھی خیر سے تنہا نہیں ہیں ہم

بندوں سے چھٹ گئے تو فرشتوں میں آ ملے