Shaukat Wasti's Photo'

شوکت واسطی

1922 - 2009 | ملتان, پاکستان

شوکت واسطی کی اشعار

عجیب بات ہے دن بھر کے اہتمام کے بعد

چراغ ایک بھی روشن ہوا نہ شام کے بعد

بڑے وثوق سے دنیا فریب دیتی رہی

بڑے خلوص سے ہم اعتبار کرتے رہے

شوکتؔ ہمارے ساتھ بڑا حادثہ ہوا

ہم رہ گئے ہمارا زمانہ چلا گیا

روش روش پہ چمن کے بجھے بجھے منظر

یہ کہہ رہے ہیں یہاں سے بہار گزری ہے

مجھے تو رنج قبا ہائے تار تار کا ہے

خزاں سے بڑھ کے گلوں پر ستم بہار کا ہے