Tajvar Najibabadi's Photo'

تاجور نجیب آبادی

1894 - 1951 | لاہور, پاکستان

تخلص : 'تاجور'

اصلی نام : احسان اللہ خاں

پیدائش : 02 May 1894 | نجیب آباد, ہندوستان

وفات : 30 Jan 1951

Relatives : یزدانی جالندھری (شاگرد), احسان دانش (شاگرد)

آہ اس کی بے کسی تو نہ جس کے ساتھ ہو

ہائے اس کی بندگی جس کا تو خدا نہیں

 

تاجور نجیب آبادی ایک باکمال شاعر، ادیب، صحافی اور ماہر تعلیم تھے۔ انہوں نے ’ہمایوں‘ اور ’مخزن‘ جیسے اہم رسائل کے ذریعے اردو کی ادبی صحافت کو نئی منزلوں سے آشنا کیا۔ اس کے علاوہ ’ادبی دنیا‘ اور ’شاہکار‘ جیسے رسائل جاری کئے۔ تاجور  ’اردو مرکز‘ کے نام سے تصنیف و تالیف کا ایک ادارہ بھی قائم کیا جس میں زبان وادب سے متعلق کئی اہم کام انجام پائے۔ 
تاجور 2 مئی 1894 کو نینی تال میں پیدا ہوئے۔ ان کا آبائی وطن نجیب آباد(یوپی) تھا۔ فارسی و عربی کی ابتدائی تعلیم حاصل کرنے کے بعد دارالعلوم دیوبند سے درس نظامیہ کی تکمیل کی۔ 1915 میں پنجاب یونیورسٹی سے مولوی فاضل اور منشی فاضل کے امتحانات پاس کئے۔ 1921 میں دیال سنگھ کالج لاہور میں فارسی اور اردو کے استاد کی حیثیت سے تقرر ہو 
30 جنوری 1951 کو لاہور میں انتقال ہوا۔