noImage

زکریا شاذ

پاکستان

غزل 17

اشعار 24

میں چپ رہا تو آنکھ سے آنسو ابل پڑے

جب بولنے لگا مری آواز پھٹ گئی

دکھ نہ سہنے کی سزاؤں میں گھرا رہتا ہے

شہر کا شہر دعاؤں میں گھرا رہتا ہے

یہ محبت ہے اسے دیکھ تماشا نہ بنا

مجھ سے ملنا ہے تو مل حد ادب سے آگے