غم

جے کرشن چودھری حبیب

غم

جے کرشن چودھری حبیب

MORE BY جے کرشن چودھری حبیب

    جہاں میں غم بھی ہے روشن تریں ستاروں میں

    دکھاتا راہ ہے ظلمت کے خارزاروں میں

    نہیں سرود میں چنگ و رباب میں بھی نہیں

    وہ ایک لے کہ ہے ٹوٹے دلوں کے تاروں میں

    خزاں کی شوکت و عظمت ہے ان پہ سب ظاہر

    جو ڈھونڈتے اسے پھرتے رہے بہاروں میں

    خوشی سے حسن نکھرتا ہے ظاہری لیکن

    جمیل روحوں کو پاؤ گے غم کے ماروں میں

    بغیر درد نہیں ہے کبھی ظہور حیات

    جگر کا خون ابھرتا ہے شاہکاروں میں

    مکیں حرم کے مصیبت کو ان کی کیا جانیں

    جو خاک چھانتے ہیں اجنبی دیاروں میں

    پسند آیا جو ٹوٹے دلوں کا عز و نیاز

    تو بس گیا ہے خدا بھی گنہ گاروں میں

    کبھی تو دیکھتے تم آ کے غم نصیبوں کو

    حسین داغ ہے سینے کے لالہ زاروں میں

    مآخذ:

    • کتاب : نغمۂ زندگی (Pg. 89)
    • Author : جے کرشن چودھری حبیب
    • مطبع : جے کرشن چودھری حبیب

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY