aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

آگ پر اشعار

اس سے کہنا کہ دھواں دیکھنے لائق ہوگا

آگ پہنے ہوئے جاوں گا میں پانی کی طرف

ابھیشیک شکلا

عقل ہر بار دکھاتی تھی جلے ہاتھ اپنے

دل نے ہر بار کہا آگ پرائی لے لے

احمد فراز

اپنے جلنے کا ہمیشہ سے تماشائی ہوں

آگ یہ کس نے لگائی مجھے معلوم نہیں

محمد اعظم

ابلتے وقت پانی سوچتا ہوگا ضرور

اگر برتن نہ ہوتا تو بتاتا آگ کو

اشونی متل عیش

اوروں کی آگ کیا تجھے کندن بنائے گی

اپنی بھی آگ میں کبھی چپ چاپ جل کے دیکھ

عابدہ کرامت

میرے ہونے سے نہ ہونا ہے مرا

آگ جلنے سے دھواں آباد ہے

جمال احسانی

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے