Jamal Ehsani's Photo'

جمال احسانی

1951 - 1998 | کراچی, پاکستان

اہم ترین ما بعد جدید پاکستانی شاعروں میں سے ایک، اپنے انفرادی شعری تجربے کے لیے معروف

اہم ترین ما بعد جدید پاکستانی شاعروں میں سے ایک، اپنے انفرادی شعری تجربے کے لیے معروف

غزل 45

اشعار 24

ہم ایسے بے ہنروں میں ہے جو سلیقۂ زیست

ترے دیار میں پل بھر قیام سے آیا

اور اب یہ چاہتا ہوں کوئی غم بٹائے مرا

میں اپنی مٹی کبھی آپ ڈھونے والا تھا

ترے نہ آنے سے دل بھی نہیں دکھا شاید

وگرنہ کیا میں سر شام سونے والا تھا

ای- کتاب 2

کلیات جمال

 

2008

رات کے جاگے ہوئے

 

1986

 

ویڈیو 5

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر
Jamal Ehsani reciting at a mushaira

جمال احسانی

جمال احسانی

وہ لوگ میرے بہت پیار کرنے والے تھے

جمال احسانی

کسی بھی دشت کسی بھی نگر چلا جاتا

جمال احسانی

کوزۂ_دنیا ہے اپنے چاک سے بچھڑا ہوا

جمال احسانی

مزید دیکھیے

شعرا متعلقہ

  • ذیشان ساحل ذیشان ساحل ہم عصر
  • عاقب صابر عاقب صابر ہم عصر
  • ثاقب لکھنوی ثاقب لکھنوی ہم عصر
  • اقرا عافیہ اقرا عافیہ ہم عصر
  • عمیر نجمی عمیر نجمی ہم عصر
  • کرشن بہاری نور کرشن بہاری نور ہم عصر
  • کشور ناہید کشور ناہید ہم عصر
  • عبدالرحمان مومن عبدالرحمان مومن ہم عصر
  • جوشؔ ملیح آبادی جوشؔ ملیح آبادی ہم عصر
  • احمد ہمدانی احمد ہمدانی ہم عصر

شعرا کے مزید "کراچی"

  • پروین شاکر پروین شاکر
  • ثروت حسین ثروت حسین
  • سارا شگفتہ سارا شگفتہ
  • افضال احمد سید افضال احمد سید
  • فہمیدہ ریاض فہمیدہ ریاض
  • سلیم کوثر سلیم کوثر
  • انور شعور انور شعور
  • ذیشان ساحل ذیشان ساحل
  • زہرا نگاہ زہرا نگاہ
  • اطہر نفیس اطہر نفیس

Added to your favorites

Removed from your favorites