Kashif Husain Ghair's Photo'

کاشف حسین غائر

1979 | کراچی, پاکستان

نئی نسل کے نمائندہ شاعر

نئی نسل کے نمائندہ شاعر

کاشف حسین غائر

غزل 31

اشعار 26

حال پوچھا نہ کرے ہاتھ ملایا نہ کرے

میں اسی دھوپ میں خوش ہوں کوئی سایہ نہ کرے

  • شیئر کیجیے

ان ستاروں میں کہیں تم بھی ہو

ان نظاروں میں کہیں میں بھی ہوں

ہماری زندگی پر موت بھی حیران ہے غائرؔ

نہ جانے کس نے یہ تاریخ پیدائش نکالی ہے

  • شیئر کیجیے

کیا چاہتی ہے ہم سے ہماری یہ زندگی

کیا قرض ہے جو ہم سے ادا ہو نہیں رہا

کل رات جگاتی رہی اک خواب کی دوری

اور نیند بچھاتی رہی بستر مرے آگے

تصویری شاعری 2

موت کا کیا کام جب اس شہر میں زندگی جیسی بلا موجود ہے

 

متعلقہ شعرا

  • علی اکبر ناطق علی اکبر ناطق ہم عصر
  • ضیاء المصطفیٰ ترک ضیاء المصطفیٰ ترک ہم عصر
  • افتخار حیدر افتخار حیدر ہم عصر
  • ادریس بابر ادریس بابر ہم عصر
  • دلاور علی آزر دلاور علی آزر ہم عصر
  • ذوالفقار عادل ذوالفقار عادل ہم عصر
  • اظہر فراغ اظہر فراغ ہم عصر
  • علی زریون علی زریون ہم عصر

"کراچی" کے مزید شعرا

  • ذیشان ساحل ذیشان ساحل
  • پروین شاکر پروین شاکر
  • انور شعور انور شعور
  • سجاد باقر رضوی سجاد باقر رضوی
  • سلیم کوثر سلیم کوثر
  • محسن احسان محسن احسان
  • دلاور فگار دلاور فگار
  • عذرا عباس عذرا عباس
  • زہرا نگاہ زہرا نگاہ
  • ادا جعفری ادا جعفری