Jaun Eliya's Photo'

جون ایلیا

1931 - 2002 | کراچی, پاکستان

پاکستان کے اہم ترین جدید شاعروں میں شامل، اپنے غیر روایتی طور طریقوں کے لیے مشہور

پاکستان کے اہم ترین جدید شاعروں میں شامل، اپنے غیر روایتی طور طریقوں کے لیے مشہور

غزل 169

اشعار 163

جو گزاری نہ جا سکی ہم سے

ہم نے وہ زندگی گزاری ہے

میں بھی بہت عجیب ہوں اتنا عجیب ہوں کہ بس

خود کو تباہ کر لیا اور ملال بھی نہیں

  • شیئر کیجیے

یہ مجھے چین کیوں نہیں پڑتا

ایک ہی شخص تھا جہان میں کیا

زندگی کس طرح بسر ہوگی

دل نہیں لگ رہا محبت میں

بہت نزدیک آتی جا رہی ہو

بچھڑنے کا ارادہ کر لیا کیا

مرثیہ 1

 

قطعہ 22

کتاب 15

گویا

 

2010

گمان

 

2006

گمان

 

 

جون ایلیا حیات اورشاعری

 

2019

جون ایلیا-خوش گزراں گزر گئے

 

2011

لیکن

 

2010

مبادا

 

 

راموز

 

2016

شاید

 

1991

شاید

 

1992

تصویری شاعری 37

کیا یہ آفت نہیں عذاب نہیں دل کی حالت بہت خراب نہیں بود پل پل کی بے_حسابی ہے کہ محاسب نہیں حساب نہیں خوب گاؤ بجاؤ اور پیو ان دنوں شہر میں جناب نہیں سب بھٹکتے ہیں اپنی گلیوں میں تا_بہ_خود کوئی باریاب نہیں تو ہی میرا سوال ازل سے ہے اور ساجن ترا جواب نہیں حفظ ہے شمس_بازغہ مجھ کو پر میسر وہ ماہتاب نہیں تجھ کو دل_درد کا نہیں احساس سو مری پنڈلیوں کو داب نہیں نہیں جڑتا خیال کو بھی خیال خواب میں بھی تو کوئی خواب نہیں سطر_مو اس کی زیر_ناف کی ہائے جس کی چاقو_زنوں کو تاب نہیں

ویڈیو 113

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر

جون ایلیا

جون ایلیا

جون ایلیا

جون ایلیا

جون ایلیا

جون ایلیا

جون ایلیا

جون ایلیا

جون ایلیا

جون ایلیا

جون ایلیا

جون ایلیا

Jaun Elia about Ubaidullah Aleem 1/3

جون ایلیا

Jaun Elia about Ubaidullah Aleem 2/3

جون ایلیا

Jaun Elia about Ubaidullah Aleem 3/3

جون ایلیا

Jaun Elia I

جون ایلیا

Jaun Eliya at a mushaira

جون ایلیا

Jaun Eliya at a mushaira

جون ایلیا

Jaun Eliya at a mushaira

جون ایلیا

Jaun Eliya at a mushaira

جون ایلیا

Jaun Eliya at a mushaira

جون ایلیا

Jaun Eliya at a mushaira

جون ایلیا

Jaun Eliya at a mushaira

جون ایلیا

Jaun Eliya at a mushaira

جون ایلیا

Jaun Eliya reciting at a mushaira

جون ایلیا

Kitne aish udaate honge- by Jaun Eliya

جون ایلیا

kuhs guzaraan-e-shehar-e-ghum

جون ایلیا

Nazm-Saza

جون ایلیا

uth samadhi se dhayan ki uth chal

جون ایلیا

Wo tabyat ke mere tha bhi nahi

جون ایلیا

جون ایلیا

آپ اپنا غبار تھے ہم تو

جون ایلیا

آج بھی تشنگی کی قسمت میں

جون ایلیا

اس کے پہلو سے لگ کے چلتے ہیں

جون ایلیا

اس کے پہلو سے لگ کے چلتے ہیں

جون ایلیا

ایک ہی مژدہ صبح لاتی ہے

جون ایلیا

بے_دلی کیا یوں_ہی دن گزر جائیں_گے

جون ایلیا

بے_قراری سی بے_قراری ہے

جون ایلیا

تنگ آغوش میں آباد کروں_گا تجھ کو

جون ایلیا

تنگ آغوش میں آباد کروں_گا تجھ کو

جون ایلیا

جز گماں اور تھا ہی کیا میرا

جون ایلیا

جو رعنائی نگاہوں کے لیے فردوس_جلوہ ہے

جون ایلیا

جی ہی جی میں وہ جل رہی ہوگی

جون ایلیا

چاند کی پگھلی ہوئی چاندی میں

جون ایلیا

چلو باد_بہاری جا رہی ہے

جون ایلیا

حالت_حال کے سبب حالت_حال ہی گئی

جون ایلیا

حالت_حال کے سبب حالت_حال ہی گئی

جون ایلیا

درخت_زرد

نہیں معلوم زریونؔ اب تمہاری عمر کیا ہوگی جون ایلیا

دل نے وفا کے نام پر کار_وفا نہیں کیا

جون ایلیا

رمز

تم جب آؤگی تو کھویا ہوا پاؤگی مجھے جون ایلیا

رمز

تم جب آؤگی تو کھویا ہوا پاؤگی مجھے جون ایلیا

رمز

تم جب آؤگی تو کھویا ہوا پاؤگی مجھے جون ایلیا

رمز

تم جب آؤگی تو کھویا ہوا پاؤگی مجھے جون ایلیا

روح پیاسی کہاں سے آتی ہے

جون ایلیا

روح پیاسی کہاں سے آتی ہے

جون ایلیا

سر ہی اب پھوڑیے ندامت میں

جون ایلیا

سر ہی اب پھوڑیے ندامت میں

جون ایلیا

سزا

ہر بار میرے سامنے آتی رہی ہو تم جون ایلیا

سمجھ میں زندگی آئے کہاں سے

جون ایلیا

شرمندگی ہے ہم کو بہت ہم ملے تمہیں

جون ایلیا

عمر گزرے_گی امتحان میں کیا

جون ایلیا

عمر گزرے_گی امتحان میں کیا

جون ایلیا

گاہے گاہے بس اب یہی ہو کیا

جون ایلیا

گاہے گاہے بس اب یہی ہو کیا

جون ایلیا

میں نہ ٹھہروں نہ جان تو ٹھہرے

جون ایلیا

نیا اک رشتہ پیدا کیوں کریں ہم

جون ایلیا

ٹھیک ہے خود کو ہم بدلتے ہیں

جون ایلیا

کبھی جب مدتوں کے بعد اس کا سامنا ہوگا

جون ایلیا

کتنے عیش سے رہتے ہوں_گے کتنے اتراتے ہوں_گے

جون ایلیا

کتنے عیش سے رہتے ہوں_گے کتنے اتراتے ہوں_گے

جون ایلیا

کسی سے عہد_و_پیماں کر نہ رہیو

جون ایلیا

ہم کہاں اور تم کہاں جاناں

جون ایلیا

ہو کا عالم ہے یہاں نالہ_گروں کے ہوتے

جون ایلیا

ہے بکھرنے کو یہ محفل_رنگ_و_بو تم کہاں جاؤ_گے ہم کہاں جائیں_گے

جون ایلیا

یہ تیرے خط تری خوشبو یہ تیرے خواب_و_خیال

جون ایلیا

آڈیو 26

جز گماں اور تھا ہی کیا میرا

کتنے عیش سے رہتے ہوں گے کتنے اتراتے ہوں گے

کتنے عیش سے رہتے ہوں_گے کتنے اتراتے ہوں_گے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

متعلقہ بلاگ

 

مزید دیکھیے

متعلقہ شعرا

  • ساقی فاروقی ساقی فاروقی ہم عصر
  • عبید اللہ علیم عبید اللہ علیم ہم عصر
  • عرفان ستار عرفان ستار شاگرد
  • انور خلیل انور خلیل ہم عصر
  • اقبال ساجد اقبال ساجد ہم عصر
  • قابل اجمیری قابل اجمیری ہم عصر
  • مخمور سعیدی مخمور سعیدی ہم عصر
  • شمیم جے پوری شمیم جے پوری ہم عصر
  • شہزاد احمد شہزاد احمد ہم عصر
  • احمد فراز احمد فراز ہم عصر

"کراچی" کے مزید شعرا

  • ذیشان ساحل ذیشان ساحل
  • آرزو لکھنوی آرزو لکھنوی
  • پروین شاکر پروین شاکر
  • سلیم احمد سلیم احمد
  • انور شعور انور شعور
  • سلیم کوثر سلیم کوثر
  • دلاور فگار دلاور فگار
  • عذرا عباس عذرا عباس
  • عبید اللہ علیم عبید اللہ علیم
  • ادا جعفری ادا جعفری