Aslam Farrukhi's Photo'

اسلم فرخی

1923 - 2016 | کراچی, پاکستان

نامورادیب ،دانشور،نقاد،محقق اورشاعر، سابق پروفیسر،چیئرمین اوررجسٹرار کراچی یونیورسٹی

نامورادیب ،دانشور،نقاد،محقق اورشاعر، سابق پروفیسر،چیئرمین اوررجسٹرار کراچی یونیورسٹی

اسلم فرخی

خاکہ 1

 

اشعار 6

کوئی منزل نہیں باقی ہے مسافر کے لیے

اب کہیں اور نہیں جائے گا گھر جائے گا

آگ سی لگ رہی ہے سینے میں

اب مزا کچھ نہیں ہے جینے میں

نہ دیکھ مجھ کو محبت کی آنکھ سے اے دوست

مرا وجود مرا مدعا نہ ہو جائے

سارے دل ایک سے نہیں ہوتے

فرق ہے کنکر اور نگینے میں

روشنی ہو رہی ہے کچھ محسوس

کیا شب آخر تمام کو پہنچی

غزل 6

نظم 3

 

کتاب 40

متعلقہ مصنفین

"کراچی" کے مزید مصنفین

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے