اپنے ہم راہ خود چلا کرنا

امیر قزلباش

اپنے ہم راہ خود چلا کرنا

امیر قزلباش

MORE BYامیر قزلباش

    اپنے ہم راہ خود چلا کرنا

    کون آئے گا مت رکا کرنا

    خود کو پہچاننے کی کوشش میں

    دیر تک آئنہ تکا کرنا

    رخ اگر بستیوں کی جانب ہے

    ہر طرف دیکھ کر چلا کرنا

    وہ پیمبر تھا، بھول جاتا تھا

    صرف اپنے لیے دعا کرنا

    یار کیا زندگی ہے سورج کی

    صبح سے شام تک جلا کرنا

    کچھ تو اپنی خبر ملے مجھ کو

    میرے بارے میں کچھ کہا کرنا

    میں تمہیں آزماؤں گا اب کے

    تم محبت کی انتہا کرنا

    اس نے سچ بول کر بھی دیکھا ہے

    جس کی عادت ہے چپ رہا کرنا

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    اپنے ہم راہ خود چلا کرنا نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY