چاندنی رات بڑی دیر کے بعد آئی ہے

سیف الدین سیف

چاندنی رات بڑی دیر کے بعد آئی ہے

سیف الدین سیف

MORE BYسیف الدین سیف

    چاندنی رات بڑی دیر کے بعد آئی ہے

    لب پہ اک بات بڑی دیر کے بعد آئی ہے

    جھوم کر آج یہ شب رنگ لٹیں بکھرا دے

    دیکھ برسات بڑی دیر کے بعد آئی ہے

    دل مجروح کی اجڑی ہوئی خاموشی سے

    بوئے نغمات بڑی دیر کے بعد آئی ہے

    آج کی رات وہ آئے ہیں بڑی دیر کے بعد

    آج کی رات بڑی دیر کے بعد آئی ہے

    آہ تسکین بھی اب سیفؔ شب ہجراں میں

    اکثر اوقات بڑی دیر کے بعد آئی ہے

    مأخذ :
    • کتاب : Kham-e-Kakul (Pg. 28)
    • Author : Saifuddin Saif
    • مطبع : Al-Hamd Publications, Lahore. Pakistan (2011)
    • اشاعت : 2011

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY