گلیوں میں بھٹکنا رہ آلام میں رہنا

اعجاز گل

گلیوں میں بھٹکنا رہ آلام میں رہنا

اعجاز گل

MORE BYاعجاز گل

    گلیوں میں بھٹکنا رہ آلام میں رہنا

    یاں سب کو ہے ناکامیٔ یک گام میں رہنا

    پہلے تو بکھر جانا گزر گاہوں کے ہم راہ

    پھر حسرت دیوار و در و بام میں رہنا

    باغات میں پھرنا خس و خاشاک پہن کر

    ہر سلسلۂ سبز کے انجام میں رہنا

    ہر سانس میں گھلنا تری دہلیز کی خوشبو

    ہر آنکھ کا دوری کے سیہ دام میں رہنا

    آواز نہ آنا کسی آباد مکاں سے

    ہر ہاتھ کا یاں دستک ناکام میں رہنا

    کچھ دیر میں کھل جائے گا بستی کا نصیبہ

    کچھ دیر ہے اور سختیٔ ایام میں رہنا

    اعجازؔ بہت دن سے ہے شہرت کا بلاوا

    تم ہو کہ وہی قریۂ‌ گم نام میں رہنا

    مآخذ:

    • کتاب : siip (Magzin) (Pg. 260)
    • Author : Nasiim Durraani
    • مطبع : Fikr-e-Nau (39 (Quarterly) )
    • اشاعت : 39 (Quarterly)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY