گیسوئے تابدار کو اور بھی تابدار کر

علامہ اقبال

گیسوئے تابدار کو اور بھی تابدار کر

علامہ اقبال

MORE BY علامہ اقبال

    INTERESTING FACT

    ( بال جبریل)

    گیسوئے تابدار کو اور بھی تابدار کر

    ہوش و خرد شکار کر قلب و نظر شکار کر

    عشق بھی ہو حجاب میں حسن بھی ہو حجاب میں

    یا تو خود آشکار ہو یا مجھے آشکار کر

    تو ہے محیط بیکراں میں ہوں ذرا سی آب جو

    یا مجھے ہمکنار کر یا مجھے بے کنار کر

    میں ہوں صدف تو تیرے ہاتھ میرے گہر کی آبرو

    میں ہوں خذف تو تو مجھے گوہر شاہوار کر

    نغمۂ نوبہار اگر میرے نصیب میں نہ ہو

    اس دم نیم سوز کو طائرک بہار کر

    باغ بہشت سے مجھے حکم سفر دیا تھا کیوں

    کار جہاں دراز ہے اب مرا انتظار کر

    روز حساب جب مرا پیش ہو دفتر عمل

    آپ بھی شرمسار ہو مجھ کو بھی شرمسار کر

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    فریحہ پرویز

    فریحہ پرویز

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    گیسوئے تابدار کو اور بھی تابدار کر نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites