میں تو اپنے آپ کو پہچاننا ہی چاہتا ہوں

مدحت الاختر

میں تو اپنے آپ کو پہچاننا ہی چاہتا ہوں

مدحت الاختر

MORE BYمدحت الاختر

    میں تو اپنے آپ کو پہچاننا ہی چاہتا ہوں

    جانتا جو کچھ نہیں وہ جاننا ہی چاہتا ہوں

    سو فرشتے لے کے میرے پاس آئیں جو صحیفہ

    اس کو اپنی چھلنیوں میں چھاننا ہی چاہتا ہوں

    سیکڑوں سورج کھڑے ہیں آئینہ در دست لیکن

    سر پہ ظلمت کی ردا میں تاننا ہی چاہتا ہوں

    جو مرے موجود میں ہے اور لا موجود میں

    جان سکتا ہی نہیں اور جاننا ہی چاہتا ہوں

    میں جو دشمن کے بلاوے پر نکل آیا ہوں مدحتؔ

    بر سر میدان میں کچھ ٹھاننا ہی چاہتا ہوں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے