مجھ پہ تو مہربان ہے پیارے

گوپال متل

مجھ پہ تو مہربان ہے پیارے

گوپال متل

MORE BYگوپال متل

    مجھ پہ تو مہربان ہے پیارے

    یہ بھی اک امتحان ہے پیارے

    یہ ترا آستان جلوہ ہے

    میرے دل کی بھی شان ہے پیارے

    کون کہتا ہے بے وفا تجھ کو

    کس کے منہ میں زبان ہے پیارے

    عاشقی اور شکوۂ بیداد

    یہ تجھے کیا گمان ہے پیارے

    تیرے کوچے کا واہ کیا کہنا

    یہ زمیں آسمان ہے پیارے

    ہے فسانہ اگر جہاں تو عشق

    اس فسانے کی جان ہے پیارے

    تو سلامت رہے ترے دم سے

    دل کی دنیا جوان ہے پیارے

    ہائے وہ داستان غم جس کی

    خامشی ترجمان ہے پیارے

    دل کی بیتابیوں کا حال نہ پوچھ

    ایک آفت میں جان ہے پیارے

    ہم بھی اردو پہ ناز کرتے ہیں

    یہ ہماری زبان ہے پیارے

    مأخذ :
    • کتاب : Kulliyat-e-gopal mittal (Pg. 145)
    • Author : Gopal Mittal
    • مطبع : Modern Publishing House, Daryaganj New delhi (1994)
    • اشاعت : 1994

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY