تجھ کو آتی ہے دلاسے کی نہیں بات کوئی

رنگیں سعادت یار خاں

تجھ کو آتی ہے دلاسے کی نہیں بات کوئی

رنگیں سعادت یار خاں

MORE BYرنگیں سعادت یار خاں

    تجھ کو آتی ہے دلاسے کی نہیں بات کوئی

    کس طرح تجھ سے رکھے جان ملاقات کوئی

    لگ چلے تجھ سے وہ کھانی ہو جسے لات کوئی

    ہاتھ کس طرح لگا دے تجھے ہیہات کوئی

    ڈر سے میں چپ ہوں ترے ورنہ بھری مجلس میں

    بات کرتا ہے کوئی تجھ سے اشارات کوئی

    مل گئے راہ میں کل وہ تو کہا رنگیںؔ نے

    کس طرح تم سے کرے اب بسر اوقات کوئی

    کچھ تو انصاف بھلا کیجئے دل میں اپنے

    تم نے مانی بھی کبھی میری اجی بات کوئی

    مآخذ:

    • کتاب : intekhaab-e-sukhan(avval) (Pg. 73)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY