تم پہ سورج کی کرن آئے تو شک کرتا ہوں

احمد کمال پروازی

تم پہ سورج کی کرن آئے تو شک کرتا ہوں

احمد کمال پروازی

MORE BYاحمد کمال پروازی

    تم پہ سورج کی کرن آئے تو شک کرتا ہوں

    چاند دہلیز پہ رک جائے تو شک کرتا ہوں

    میں قصیدہ ترا لکھوں تو کوئی بات نہیں

    پر کوئی دوسرا دہرائے تو شک کرتا ہوں

    اڑتے اڑتے کبھی معصوم کبوتر کوئی

    آپ کی چھت پہ اتر جائے تو شک کرتا ہوں

    پھول کے جھنڈ سے ہٹ کر کوئی پیاسا بھنورا

    تیرے پہلو سے گزر جائے تو شک کرتا ہوں

    ''شیو'' تو ایک تراشی ہوئی مورت ہے مگر

    تو انہیں دیکھ کے شرمائے تو شک کرتا ہوں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق,

    نعمان شوق

    تم پہ سورج کی کرن آئے تو شک کرتا ہوں نعمان شوق

    مأخذ :
    • کتاب : Chandi Ka waraq (Pg. 72)
    • Author : Ahmad Kamal Parvazi
    • مطبع : Surkhwab Publication (2009)
    • اشاعت : 2009

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے