واں ارادہ آج اس قاتل کے دل میں اور ہے

بہادر شاہ ظفر

واں ارادہ آج اس قاتل کے دل میں اور ہے

بہادر شاہ ظفر

MORE BYبہادر شاہ ظفر

    واں ارادہ آج اس قاتل کے دل میں اور ہے

    اور یہاں کچھ آرزو بسمل کے دل میں اور ہے

    وصل کی ٹھہراوے ظالم تو کسی صورت سے آج

    ورنہ ٹھہری کچھ ترے مائل کے دل میں اور ہے

    ہے ہلال و بدر میں اک نور پر جو روشنی

    دل میں ناقص کے ہے وہ کامل کے دل میں اور ہے

    پہلے تو ملتا ہے دل داری سے کیا کیا دل ربا

    باندھتا منصوبے پھر وہ مل کے دل میں اور ہے

    ہے مجھے بعد از سوال بوسہ خواہش وصل کی

    یہ تمنا ایک اس سائل کے دل میں اور ہے

    گو وہ محفل میں نہ بولا پا گئے چتون سے ہم

    آج کچھ اس رونق محفل کے دل میں اور ہے

    یوں تو ہے وہ ہی دل عالم کے دل میں اے ظفرؔ

    اس کا عالم مرد صاحب دل کے دل میں اور ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    مہران امروہی

    مہران امروہی

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    واں ارادہ آج اس قاتل کے دل میں اور ہے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY