وہ کہاں ساتھ سلاتے ہیں مجھے

مومن خاں مومن

وہ کہاں ساتھ سلاتے ہیں مجھے

مومن خاں مومن

MORE BYمومن خاں مومن

    وہ کہاں ساتھ سلاتے ہیں مجھے

    خواب کیا کیا نظر آتے ہیں مجھے

    اس پری وش سے لگاتے ہیں مجھے

    لوگ دیوانہ بناتے ہیں مجھے

    یا رب ان کا بھی جنازہ اٹھے

    یار اس کو سے اٹھاتے ہیں مجھے

    ابروئے تیغ سے ایما ہے کہ آ

    قتل کرنے کو بلاتے ہیں مجھے

    بے وفائی کا عدو کی ہے گلہ

    لطف میں بھی وہ ستاتے ہیں مجھے

    حیرت حسن سے یہ شکل بنی

    کہ وہ آئینہ دکھاتے ہیں مجھے

    پھونک دے آتش دل داغ مرے

    اس کی خو یاد دلاتے ہیں مجھے

    گر کہے غمزہ کسے قتل کروں

    تو اشارت سے بتاتے ہیں مجھے

    میں تو اس زلف کی بو پر غش ہوں

    چارہ گر مشک سنگھاتے ہیں مجھے

    شعلہ رو کہتے ہیں اغیار کو وہ

    اپنے نزدیک جلاتے ہیں مجھے

    جاں گئی پر نہ گئی جورکشی

    بعد مردن بھی دباتے ہیں مجھے

    وہ جو کہتے ہیں تجھے آگ لگے

    مژدۂ وصل سناتے ہیں مجھے

    اب یہ صورت ہے کہ اے پردہ نشیں

    تجھ سے احباب چھپاتے ہیں مجھے

    مومنؔ اور دیر خدا خیر کرے

    طور بے ڈھب نظر آتے ہیں مجھے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY