زندگی جیسی توقع تھی نہیں کچھ کم ہے

شہریار

زندگی جیسی توقع تھی نہیں کچھ کم ہے

شہریار

MORE BY شہریار

    زندگی جیسی توقع تھی نہیں کچھ کم ہے

    ہر گھڑی ہوتا ہے احساس کہیں کچھ کم ہے

    گھر کی تعمیر تصور ہی میں ہو سکتی ہے

    اپنے نقشے کے مطابق یہ زمیں کچھ کم ہے

    بچھڑے لوگوں سے ملاقات کبھی پھر ہوگی

    دل میں امید تو کافی ہے یقیں کچھ کم ہے

    اب جدھر دیکھیے لگتا ہے کہ اس دنیا میں

    کہیں کچھ چیز زیادہ ہے کہیں کچھ کم ہے

    آج بھی ہے تری دوری ہی اداسی کا سبب

    یہ الگ بات کہ پہلی سی نہیں کچھ کم ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    شہریار

    شہریار

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY