دلی کے شاعر اور ادیب

کل: 172

اردو شاعری کے بنیاد سازوں میں سے ایک، میر تقی میر کے ہم عصر

اردو/ ہندوی کے پہلے شاعر، حضرت نظام الدین اولیا کے شاگرد اور ماہر موسیقی ، اپنی ’ پہیلیوں‘ کے لئے مشہور جو ہندوستانی لوک ادب کا حصہ ہیں، طبلہ اور ستار جیسے اہم ساز ایجاد کئے۔ ’ زحال مسکیں مکن تغافل‘ جیسی غزل لکھی جسے اردو/ ہندوی شاعری کا نقش اول کہا جاتا ہے

ممتاز ترین قبل از جدید شاعروں میں نمایاں، جنہوں نے جدید شاعری کے لئے راہ ہموار کی۔ اپنے بصیرت افروز تنقیدی تبصروں کے لئے معروف۔ گیان پیٹھ انعام سے سرفراز

صوفی شاعر، میرتقی میر کے ہم عصر ، ہندوستانی موسیقی کے گہرے علم کے لئے مشہور

عظیم شاعر۔ عالمی ادب میں اردو کی آواز۔ خواص و عوام دونوں میں مقبول۔

غالب اور ذوق کے ہم عصر۔ وہ حکیم ، ماہر نجوم اور شطرنج کے کھلاڑی بھی تھے۔ کہا جاتا ہے کہ مرزا غالب نے ان کے شعر ’ تم مرے پاس ہوتے ہو گویا/ جب کوئی دوسرا نہیں ہوتا‘ پر اپنا پورا دیوان دینے کی بات کہی تھی

شاعری کے علاوہ اپنی خوش شکلی کے لئے بھی مشہور ہیں۔ کم عمری میں وفات پائی۔

مغل بادشاہ شاہ عالم ثانی کے استاد، میر تقی میر کے متاخرین شعرا کے ہم عصر

غالب کی غزلیہ شاعری کی نکتہ چینی کے لیے معروف

جدید اردو نظم اور تنقید کا اہم نام ، ہندوستانی فلسفے اور موسیقی سے گہری دلچسپی تھی ، آل انڈیا ریڈیو سے وابستہ رہے

ممتاز جدید شاعر اور افسانہ نگار، ہندوستان میں جدید اردو نظم کے فرو غ کے لئے اہم خدمات انجام دیں۔

داغ دہلوی کے شاگرد

پہلے اردو ناول نگار

میر سے قبل اردو کے ممتاز شاعر جنھوں نے اردو شاعری کی بنیاد رکھی

ادیب، محقق، اردو شعرا کا تذکرہ،چار ضخیم جلدوں میں با عتبار حروف تہجی’خمخانہ جاوید‘ کے مرتب

اہم ترقی پسند شاعر، ان کی کچھ غزلیں ’ بازار‘ اور ’ گمن‘ جیسی فلموں کے سبب مقبول

ممتاز ترین جدید شاعروں اور نقادوں میں نمایاں

جدید اردو تنقید کے بنیاد سازوں میں شامل ہیں

ہندوستان کی تحریک آزادی کے بڑے رہنماؤں میں شامل، عظیم عالم اور مفکر

آخری کلاسیکی دور کے اہم شاعر، داغ دہلوی کے شاگرد

الہ آباد ہائی کورٹ کے جج تھے۔ لوک سبھا کے رکن بھی رہے

مابعد کلاسکی شاعر،ذوق اور غالب کے شاگرد،اپنے ضرب المثل اشعار کے لیے مشہور

مشہور شاعر جوش ملسیانی کے صاحبزادے

کلاسکی روایت کے ممتاز مزاحیہ شاعر،اپنی مخصوص زبان اور طرزاظہار کے لیے مشہور

کلاسیکی طرز معروف شاعر/ سیماب اکبرآبادی کے شاگرد

ممتاز صحافی اور شاعر

ہندوستان کے دارالحکومت دہلی کے ممتاز صوفی اور امیر خسرو کے پیرو مرشد

مغلیہ سلطنت کے شہنشاہ شاہ جہاں کی صاحبزادی اور صوفی خاتون، مصنفہ و شاعرہ

ممتاز و معروف صحافی،ادیب،ناول نویس،افسانہ نگار،ٹریڈ یونیسٹ اور سماجی کارکن

ممتاز جدید شاعر،رسالہ "سطور" کے مدیر

ممتاز ترین جدید شاعروں میں معروٖف۔ دوردرشن سے وابستہ

بھگوت گیتا کا اردو میں منظوم ترجمہ کرنے کے لئے مشہور

بولیے