نئی دنیا

راجندر ناتھ رہبر

نئی دنیا

راجندر ناتھ رہبر

MORE BY راجندر ناتھ رہبر

    دل مجبور تو مجھ کو کسی ایسی جگہ لے چل

    جہاں محبوب محبوبہ سے آزادانہ ملتا ہو

    کسی کا نرم و نازک ہاتھ اپنے ہاتھ میں لے کر

    نکل سکتا ہو بے کھٹکے کوئی سیر گلستاں کو

    نگاہوں کے جہاں پہرے نہ ہوں دل کے دھڑکنے پر

    جہاں چھینی نہ جاتی ہو خوشی اہل محبت کی

    جہاں ارماں بھرے دل خون کے آنسو نہ روتے ہوں

    جہاں روندی نہ جاتی ہو خوشی اہل محبت کی

    جہاں جذبات اہل دل کے ٹھکرائے نہ جاتے ہوں

    جہاں باغی نہ کہتا ہو کوئی خوددار انساں کو

    جہاں برسائے جاتے ہوں نہ کوڑے ذہن انساں پر

    خیالوں کو جہاں زنجیر پہنائی نہ جاتی ہو

    کہاں تک اے دل ناداں قیام ایسے گلستاں میں

    جہاں بہتا ہو خون گرم انساں شاہراہوں پر

    درندوں کی جہاں چاندی ہو ظالم دندناتے ہوں

    جھپٹ پڑتے ہوں شاہیں جس جگہ کمزور چڑیوں پر

    دل مجبور تو مجھ کو کسی ایسی جگہ لے چل

    جہاں محبوب محبوبہ سے آزادانہ ملتا ہو

    مآخذ:

    • کتاب : Yad aaunga (Pg. 136)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY