noImage

عباس علوی

غزل 3

 

اشعار 3

یہ تم سے کس نے کہا ہے کہ داستاں نہ کہو

مگر خدا کے لیے اتنا سچ یہاں نہ کہو

جو سارے ہم سفر اک بار حرز جاں کر لیں

تو جس زمیں پہ قدم رکھیں آسماں کر لیں

جانتا ہوں کون کیا ہے آپ کیوں دیں مشورہ

میں لٹیروں سے بھی واقف اور رہبر آشنا

 

Added to your favorites

Removed from your favorites