Afroz Alam's Photo'

افروز عالم

1975 | سعودیہ عربیہ

افروز عالم

غزل 22

نظم 28

اشعار 12

یہ کھلا جسم کھلے بال یہ ہلکے ملبوس

تم نئی صبح کا آغاز کرو گے شاید

  • شیئر کیجیے

تمہاری گفتگو سے آس کی خوشبو چھلکتی ہے

جہاں تم ہو وہاں پہ زندگی معلوم ہوتی ہے

میں ذہنی طور پہ آوارہ ہوتا جاتا ہوں

مرے شعور مجھے اپنی حد کے اندر کھینچ

زمانہ تجھ کو حریف کہہ لے اسے یہ حق ہے

مری نظر میں تو دیوتا ہے یہی بہت ہے

ستاتی ہے تمہاری یاد جب مجھ کو شب ہجراں

مجھے خود اپنی ہستی اجنبی معلوم ہوتی ہے

کتاب 2

 

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے