aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

افسر الہ آبادی کے اشعار

نہ ہو یا رب ایسی طبیعت کسی کی

کہ ہنس ہنس کے دیکھے مصیبت کسی کی

تمہارے ہجر میں کیوں زندگی نہ مشکل ہو

تمہیں جگر ہو تمہیں جان ہو تمہیں دل ہو

مجھے گم شدہ دل کا غم ہے تو یہ ہے

کہ اس میں بھری تھی محبت کسی کی

خبر دیتی ہے یاد کرتا ہے کوئی

جو باندھا ہے ہچکی نے تار آتے آتے

حسینوں کی دونوں ادائیں ہیں دلبر

کسی کی حیا تو شرارت کسی کی

ہمارا کوہ غم کیا سنگ خارا ہے جو کٹ جاتا

اگر مر مر کے زندہ کوہ کن ہوتا تو کیا ہوتا

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے