غزل

اچھا ہے تو نے ان دنوں دیکھا نہیں مجھے

نعمان شوق

اس لیے دل برا کیا ہی نہیں

نعمان شوق

جو دل کو پہلے میسر تھا کیا ہوا اس کا

نعمان شوق

رات گہری ہے مگر ایک سہارا ہے مجھے

نعمان شوق

کوئی نام ہے نہ کوئی نشاں مجھے کیا ہوا

نعمان شوق

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI