aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
Hadi Machlishahri's Photo'

ہادی مچھلی شہری

1890 - 1961 | پاکستان

ہادی مچھلی شہری کا تعارف

تخلص : 'ہادی'

اصلی نام : سید محمد ہادی

پیدائش :جون پور, اتر پردیش

وفات : 25 Oct 1961 | کراچی, سندھ

اب کیوں گلہ رہے گا مجھے ہجر یار کا

بے تابیوں سے لطف اٹھانے لگا ہوں میں

 

ہادی مچھلی شہری 1890 کو ضلع جونپور میں پیدا ہوئے۔ ان کے والد سید عبدالرزاق غالب کے شاگروں میں سے تھے۔ اپنے والد کے زیر اثر وہ بھی بہت چھوٹی سی عمر سے شعر کہنے لگے تھے۔ جلیل مانک پوری سے مشورۂ سخن کے بعد ان کی تخلیقی صلاحیتیں اور نکھرنے لگیں۔ ’صدائےدل‘ ’نوائے دل‘ ان کے شعری مجموعے ہیں۔ 
ہادی مچھلی شہری پیشے کے لحاظ سے وکیل تھے۔ علی گڑھ اور الہ آباد میں وکالت کی۔ تقسیم کے بعد کراچی چلے گئے تھے۔ کراچی میں ہی 25 اکتوبر 1961 کو انتقال ہوا۔ 

 

موضوعات

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے