Jagan Nath Azad's Photo'

جگن ناتھ آزاد

1918 - 2004 | دلی, ہندوستان

اہم اسکالر اور شاعر ، پاکستان کا پہلا قومی ترانہ لکھا

اہم اسکالر اور شاعر ، پاکستان کا پہلا قومی ترانہ لکھا

تخلص : 'آزاد'

اصلی نام : جگن ناتھ آزاد

پیدائش : 05 Dec 1918 | میانوالی, پنجاب

وفات : 24 Jul 2004

Relatives : تلوک چند محروم (والد)

LCCN :n82001591

اللہ رے بے خودی کہ ترے گھر کے آس پاس

ہر در پہ دی صدا ترے در کے خیال میں

جگن ناتھ نام اور آزاد تخلص تھا۔۵؍دسمبر۱۹۱۸ء کو عیسی خیل، ضلع میانوالی میں پیدا ہوئے۔تلوک چند محروم کے فرزند تھے۔ آزاد نے ۱۹۳۹ء میں گارڈن کالج، راول پنڈی سے بی اے کی ڈگری حاصل کی۔۱۹۴۴ء میں پنجاب یونیورسٹی سے فارسی میں ایم اے اور ایم او ایل بھی اسی یونیورسٹی سے کیا۔ قیام پاکستان کے بعد ترک وطن کر کے دہلی چلے گئے اور رسالہ ’’آج کل‘‘ کے ادارہ تحریر سے منسلک ہوگئے۔بعد ازاں ۱۹۷۰ء سے ۱۹۸۰ء تک پروفیسر اور صدر شعبہ اردو کی حیثیت سے جموںیونیورسٹی سے وابستہ رہے۔ اس کے بعد انھوں نے ڈین فیکلٹی آف اورینٹل ٹریننگ کی ذمے داریا ں بھی سنبھالیں۔کشمیر اور سری نگر یونیورسٹی نے ان کو ڈی لٹ کی اعزازی ڈگری عطا کی۔ انھوں نے تمام اصناف سخن میں طبع آزمائی کی۔ ان کی مادری زبان سرائیکی تھی، لیکن تمام زندگی اردوزبان وادب کے لیے بے لوث خدمات انجام دیتے رہے۔ان کی چند کتابوں کے نام یہ ہیں:’بے کراں‘، ’ستاروں سے ذروں تک‘، ’وطن میں اجنبی‘ ، ’نواے پریشاں‘، ’کہکشاں‘، ’بوئے رمیدہ‘، ’جستجو‘، ’گہوارہ علم وہنر‘، ’آئینہ در آئینہ‘(شعری مجموعے) ’روبرو‘(خطوط کا مجموعہ)’نشان منزل‘(تنقیدی مضامین)’اقبال او راس کا عہد‘، ’اقبال اور مغربی مفکرین‘، ’اقبال اور کشمیر‘، ’ اقبال شخصیت اور شاعری‘، ’دہلی کی جامع مسجد‘، ’کولمبس کے دیس میں‘(سفرنامۂ امریکا وکینیڈا)۔ ممتاز شاعر، محقق اور ماہر اقبالیات پروفیسر جگن ناتھ آزاد ۲؍جولائی۲۰۰۴ء کو جموں میں طویل علالت کے بعد سدھار گئے۔ بحوالۂ:پیمانۂ غزل(جلد دوم)،محمد شمس الحق،صفحہ:93

موضوعات