Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
Mahfooz Mohammad's Photo'

محفوظ محمد

1978 | دلی, انڈیا

شاعر، ادیب اور دہلی وقف بورڈ میں سیکشن آفیسر

شاعر، ادیب اور دہلی وقف بورڈ میں سیکشن آفیسر

محفوظ محمد کے اشعار

تمہارے ساتھ ہونے سے مجھے تسکین ملتی ہے

مرے ہمدم مرے دلبر ہمارے ساتھ رہنا تم

اپنی امی کو محبت سے جو دیکھا میں نے

پوری جنت مری آنکھوں میں سمٹ آئی ہے

ہم تمہارے تو ہر طرح سے ہیں

اور کسی کے کسی طرح بھی نہیں

دریا نے شرط باندھی تھی قیمت پہ پیاس کی

ہم نے بھی جان دے دی مگر تشنگی نہ دی

قیادت پھر سے پانے کو ہے یہ علامہ کا نسخہ

سبق پڑھ لے عدالت کے صداقت کے شجاعت کے

کیا کہا خوشبوئیں لٹاتا ہوں

میں تری ہاں میں ہاں ملاتا ہوں

مجھے تم سے الجھنا ہے کسی دن

بہت سے مسئلے سلجھا سکوں گا

فضاؤں میں محبت گھولتا ہوں

میں ہندی ہوں میں اردو بولتا ہوں

کدھر نشانہ لگا رہے ہو کہاں نگاہیں ٹکی ہوئی ہیں

یہ کیسے پکڑی ہوئی ہے تم نے کماں تمہاری مڑی ہوئی ہے

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے