Mohammad Izhar ul Haq's Photo'

محمد اظہار الحق

1948 - | پاکستان

اندھیری شام تھی بادل برس نہ پائے تھے

وہ میرے پاس نہ تھا اور میں کھل کے رویا تھا

گھرا ہوا ہوں جنم دن سے اس تعاقب میں

زمین آگے ہے اور آسماں مرے پیچھے

کوئی زاری سنی نہیں جاتی کوئی جرم معاف نہیں ہوتا

اس دھرتی پر اس چھت کے تلے کوئی تیرے خلاف نہیں ہوتا

ترا پاؤں شام پہ آ گیا تھا کہ چاند تھا

ترا ہجر صبح کو جل اٹھا تھا کہ پھول تھا

Added to your favorites

Removed from your favorites