Nida Fazli's Photo'

ندا فاضلی

1938 - 2016 | ممبئی, ہندوستان

ممتاز ترین جدید شاعروں میں شامل، مقبول عام شاعر۔ ممتاز فلم نغمہ نگار اور نثر نگار، اپنی غزل ’کبھی کسی کو مکمل جہاں نہیں ملتا۔۔۔۔‘ کے لئے مشہور

ممتاز ترین جدید شاعروں میں شامل، مقبول عام شاعر۔ ممتاز فلم نغمہ نگار اور نثر نگار، اپنی غزل ’کبھی کسی کو مکمل جہاں نہیں ملتا۔۔۔۔‘ کے لئے مشہور

تخلص : 'ندا'

اصلی نام : مقتدی حسن فاضلی

پیدائش : 12 Oct 1938, دلی, ہندوستان

وفات : 08 Feb 2016

Relatives : امید فاضلی (بھائی)

LCCN :n89115728

گھر سے مسجد ہے بہت دور چلو یوں کر لیں

کسی روتے ہوئے بچے کو ہنسایا جائے

the mosques too far so for a while

some weeping child, let us make smile

the mosques too far so for a while

some weeping child, let us make smile

نام مقتداحسن فاضلی اور تخلص ندا ہے۔۱۲؍اکتوبر ۱۹۳۸ء کو دہلی میں پیدا ہوئے۔ ندا فاضلی دعاڈبائیوی کے صاحبزادے ہیں۔ بی اے تک تعلیم حاصل کی۔ بمبئی میں فلمی نغمہ نگاری کرتے ہیں۔ ان کا شعری مجموعہ ’’لفظوں کا پل‘‘ کے نام سے چھپ گیا ہے۔ ان کی دیگر تصانیف کے نام یہ ہیں:’’کھویا ہوا سا کچھ‘‘، ’’دیواروں کے باہر‘‘، ’’دیواروں کے بیچ‘‘(خود نوشت)، ’’شہر میرے ساتھ چل تو‘‘، ’’مورناچ‘‘(مجموعہ کلام)، ’’ملاقاتیں‘‘(خاکے) ۔ مہاراشٹر اردو اکادمی، بمبئی اور ساہتیہ پریشد ، بھوپال سے ان کی کتابوں پر انعامات ملے۔ بحوالۂ:پیمانۂ غزل(جلد دوم)،محمد شمس الحق،صفحہ:335