Qabil Ajmeri's Photo'

قابل اجمیری

1931 - 1962 | حیدرآباد, پاکستان

قابل اجمیری کا تعارف

تخلص : 'قابل'

اصلی نام : عبد الرحیم

پیدائش : 27 Aug 1931 | اجمیر, راجستھان

وفات : 03 Oct 1962 | رام پور, اتر پردیش

وقت کرتا ہے پرورش برسوں

حادثہ ایک دم نہیں ہوتا

نام عبدالرحیم اور قابل تخلص تھا۔۲۷؍اگست ۱۹۳۱ء کو قصبہ چرلی، ضلع اجمیر میں پیدا ہوئے۔قابل کے مکان کے عقبی دروازے کے سامنے خواجہ معین الدین چشتیؒ کی درگاہ ہے۔ قابل نے اپنا لڑکپن اسی درسگاہ شریف کے علمی وادبی اور روحانی ماحول میں گزارا۔ انھوں نے قوالیوں کی صورت میں مختلف شعرا کی غزلیں اور نعتیں اتنی بار سنیں کہ بہت سا کلام حفظ ہوگیا اور یہ ان کے شاعر بننے کا موجب بھی ہوا۔ قابل ارمان اجمیری اور معنی اجمیری سے اصلاح لینے لگے۔تقسیم ہند کے بعد پاکستان آگئے۔مفلسی اور بیماری کی وجہ سے ۳۱ سال کی عمر میں ۳؍اکتوبر۱۹۶۲ء کو حیدرآباد میں انتقال کرگئے۔ ان کے انتقال کے بعد ان کے شعری مجموعے’’دیدۂ بیدار‘‘، ’’خون رگ جاں‘‘ اور ’’باقیات قابل‘‘ شائع ہوئے۔ ’کلیات قابل ‘ بھی شائع ہوگئی ہے۔حکومت سند ھ نے انھیں ’’شاعر سندھ‘‘ کے خطاب سے نوازا۔ بحوالۂ:پیمانۂ غزل(جلد دوم)،محمد شمس الحق،صفحہ:256

موضوعات

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI