تو میرے سجدوں کی لاج رکھ لے شعور سجدہ نہیں ہے مجھ کو

یہ سر ترے آستاں سے پہلے کسی کے آگے جھکا نہیں ہے

روح میں جس نے یہ دہشت سی مچا رکھی ہے

اس کی تصویر گماں بھر تو بنا سکتے ہیں