غزل 22

اشعار 4

وقت خوش خوش کاٹنے کا مشورہ دیتے ہوئے

رو پڑا وہ آپ مجھ کو حوصلہ دیتے ہوئے

  • شیئر کیجیے

اک گھر بنا کے کتنے جھمیلوں میں پھنس گئے

کتنا سکون بے سر و سامانیوں میں تھا

سمٹتی پھیلتی تنہائی سوتے جاگتے درد

وہ اپنے اور مرے درمیان چھوڑ گیا

کتاب 5

ڈوبتے بدن کا ہاتھ

 

 

گزے وقتوں کی عبارت

 

1973

گزرے وقتوں کی عبارت

 

1980

انتساب

 

1978

اردو میں نعت گوئی

 

1990

 

آڈیو 6

آنچ آئے_گی نہ اندر کی زباں تک اے دل

بجا ہے ہم ضرورت سے زیادہ چاہتے ہیں

جو سیل_درد اٹھا تھا وہ جان چھوڑ گیا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

مزید دیکھیے

"فیصل آباد" کے مزید شعرا

  • انجم سلیمی انجم سلیمی
  • جہانزیب ساحر جہانزیب ساحر
  • علی زریون علی زریون
  • ظفر عجمی ظفر عجمی
  • ارشد عزیز ارشد عزیز
  • مرزا فرحان عارض مرزا فرحان عارض
  • بابر علی اسد بابر علی اسد
  • ناز خیالوی ناز خیالوی
  • ثناء اللہ ظہیر ثناء اللہ ظہیر
  • سید جون عباس کاظمی سید جون عباس کاظمی