Sameena Raja's Photo'

ثمینہ راجہ

1958 - 2012 | اسلام آباد, پاکستان

ثمینہ راجہ

غزل 14

اشعار 4

شاعری جھوٹ سہی عشق فسانہ ہی سہی

زندہ رہنے کے لیے کوئی بہانہ ہی سہی

سفر کی شام ستارہ نصیب کا جاگا

پھر آسمان محبت پہ اک ہلال کھلا

آب حیراں پر کسی کا عکس جیسے جم گیا

آنکھ میں بس ایک لمحے کے لئے ٹھہرا خیال

کیا کریں آنکھ اگر اس سے سوا چاہتی ہے

یہ جہان گزراں آئنہ خانہ ہی سہی

کتاب 1

ہویدا

 

1995

 

آڈیو 5

دل مانگے ہے موسم پھر امیدوں کا

ہم تو یوں الجھے کہ بھولے آپ ہی اپنا خیال

سمندر کی جانب سے آتی ہوا میں

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

مزید دیکھیے

متعلقہ شعرا

  • فرحت احساس فرحت احساس ہم عصر
  • آشفتہ چنگیزی آشفتہ چنگیزی ہم عصر

"اسلام آباد" کے مزید شعرا

  • احمد فراز احمد فراز
  • افتخار عارف افتخار عارف
  • کشور ناہید کشور ناہید
  • جوشؔ ملیح آبادی جوشؔ ملیح آبادی
  • سرفراز زاہد سرفراز زاہد
  • ضیا جالندھری ضیا جالندھری
  • اکبر حمیدی اکبر حمیدی
  • حارث خلیق حارث خلیق
  • نور بجنوری نور بجنوری
  • اظہرنقوی اظہرنقوی