Premchand's Photo'

پریم چند

1880 - 1936 | بنارس, ہندوستان

افسانہ 62

مضمون 13

اقوال 31

دولت سے آدمی کو جو عزت ملتی ہے وہ اس کی نہیں اس کی دولت کی عزت ہوتی ہے۔

  • شیئر کیجیے

سونے اور کھانے کا نام زندگی نہیں ہے۔ آگے بڑھتے رہنے کی لگن کا نام زندگی ہے۔

  • شیئر کیجیے

میں ایک مزدور ہوں جس دن کچھ لکھ نہ لوں اس دن مجھے روٹی کھانے کا کوئی حق نہیں۔

  • شیئر کیجیے

مایوسی ممکن کو بھی ناممکن بنا دیتی ہے۔

  • شیئر کیجیے

شاعری کا اعلیٰ ترین فرض انسان کو بہتر بنانا ہے۔

  • شیئر کیجیے

کتاب 197

آہنگ غالب

 

 

آخری تحفہ

 

1939

آخری تحفہ

 

 

آزادی کی منزل تک

 

1946

افسانہ نگار پریم چند

تنقیدی و سماجی محاکمہ

2006

بازار حسن

 

1956

بازار حسن

 

1987

بازار حسن

حصہ۔001

1929

بیوہ

 

1941

بیوہ

 

1955

متعلقہ بلاگ

 

متعلقہ مصنفین

  • سدرشن سدرشن ہم عصر

"بنارس" کے مزید مصنفین

  • وسیم حیدر ہاشمی وسیم حیدر ہاشمی
  • یعقوب یاور یعقوب یاور
  • روشن بنارسی روشن بنارسی
  • نفیس بانو نفیس بانو
  • حنیف نقوی حنیف نقوی