Rajinder Singh Bedi's Photo'

راجندر سنگھ بیدی

1915 - 1984 | ممبئی, ہندوستان

اردو کے چند ممتاز ترین افسانہ نگاروں میں شامل، منٹو کے ہم عصر ، ہندوستانی مزاج اور اساطیر ی حوالوں سے کہانیاں بنانے کے لیے معروف۔ ناول ، ڈرامے اور فلموں کے لیے ڈائلاگ اور کہانیاں بھی لکھیں۔

اردو کے چند ممتاز ترین افسانہ نگاروں میں شامل، منٹو کے ہم عصر ، ہندوستانی مزاج اور اساطیر ی حوالوں سے کہانیاں بنانے کے لیے معروف۔ ناول ، ڈرامے اور فلموں کے لیے ڈائلاگ اور کہانیاں بھی لکھیں۔

راجندر سنگھ بیدی کے افسانے

1.4K
Favorite

باعتبار

متھن

فنکار کی ناقدری اور اس کے استحصال کی کہانی ہے۔ کیرتی ایک آرٹسٹ کی بیٹی ہے جس کے بنائے ہوئے فن پاروں کو مگن لال کوڑیوں کے مول خریدتا ہے اور انہیں سیکڑوں ہزاروں روپے میں فروخت کرتا ہے۔ کیرتی کی ماں اسپتال میں بھرتی ہوتی ہے، اسے آپریشن کے لئے پیسوں کی سخت ضرورت ہوتی ہے لیکن اس وقت بھی مگن لال اپنے استحصالی رویہ سے باز نہیں آتا اور وہ سیکڑوں روپے کی مورتی کے صرف دس روپے دیتا ہے۔ مگن لال کیرتی کو شہوانی مورتیاں بنانے کےلئے اکساتا ہے اور کیرتی اس سے وعدہ کرکے چلی جاتی ہے۔ اس دوران کیرتی کی ماں مر جاتی ہے۔ کیرتی جب اگلی مرتبہ متھن لے کر آتی ہے تو اس سے ہزار روپے کا مطالبہ کرتی ہے جس پر تکرار ہوتی ہے۔۔۔ مگن جب متھن کو دیکھتا ہے تو اس میں بنی ہوئی عورت کے پردے میں کیرتی کو دیکھ لیتا ہے۔ جس پر وہ اپنے شک کا اظہار کرتا ہہے تو کیرتی اس کے منہ پر تھپڑ مار کر چلی جاتی ہے۔ مرد کا رویہ ایک کمزور عورت کو کس طرح طاقت ور بنا دیتا ہے، یہی اس کہانی کا خلاصہ ہے۔