noImage

آسی غازی پوری

1834 - 1917 | غازی پور, ہندوستان

متصوفانہ فکر کے معروف شاعر

متصوفانہ فکر کے معروف شاعر

آسی غازی پوری

غزل 18

اشعار 13

اے جنوں پھر مرے سر پر وہی شامت آئی

پھر پھنسا زلفوں میں دل پھر وہی آفت آئی

درد دل کتنا پسند آیا اسے

میں نے جب کی آہ اس نے واہ کی

میری آنکھیں اور دیدار آپ کا

یا قیامت آ گئی یا خواب ہے

  • شیئر کیجیے

دل دیا جس نے کسی کو وہ ہوا صاحب دل

ہاتھ آ جاتی ہے کھو دینے سے دولت دل کی

  • شیئر کیجیے

وہ کہتے ہیں میں زندگانی ہوں تیری

یہ سچ ہے تو ان کا بھروسا نہیں ہے

کتاب 2

عین المعارف

 

1988

انتخاب کلام آسی غازی پوری

 

1983

 

تصویری شاعری 2

وہ پھر وعدہ ملنے کا کرتے ہیں یعنی ابھی کچھ دنوں ہم کو جینا پڑے_گا

 

آڈیو 6

اتنا تو جانتے ہیں کہ عاشق فنا ہوا

اے جنوں پھر مرے سر پر وہی شامت آئی

ترے کوچے کا رہ_نما چاہتا ہوں

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

"غازی پور" کے مزید شعرا

  • خاموش غازی پوری خاموش غازی پوری