Arman Najmi's Photo'

ارمان نجمی

1940 - 2020 | پٹنہ, انڈیا

ارمان نجمی

غزل 23

نظم 1

 

اشعار 4

گھٹن سے بچ کے کہیں سانس لے نہیں سکتے

جہاں بھی جائیں یہ کالا دھواں تو سر پر ہے

  • شیئر کیجیے

ارماںؔ بس ایک لذت اظہار کے سوا

ملتا ہے کیا خیال کو لفظوں میں ڈھال کر

ہوا ہے قریۂ جاں میں یہ سانحہ کیسا

مرے وجود کے اندر ہے زلزلہ کیسا

  • شیئر کیجیے

بچا کیا رہ گیا کالک بھرے جھلسے مکانوں میں

اجاڑی بستیوں کی بے نشانی کا تماشا کر

کتاب 5

 

"پٹنہ" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے