Mubarak Azimabadi's Photo'

مبارک عظیم آبادی

1896 - 1959 | پٹنہ, ہندوستان

بہار کے ممتاز مابعد کلاسیکی شاعر

بہار کے ممتاز مابعد کلاسیکی شاعر

مبارک عظیم آبادی

غزل 35

اشعار 76

جو نگاہ ناز کا بسمل نہیں

دل نہیں وہ دل نہیں وہ دل نہیں

رہنے دے اپنی بندگی زاہد

بے محبت خدا نہیں ملتا

  • شیئر کیجیے

تیری بخشش کے بھروسے پہ خطائیں کی ہیں

تیری رحمت کے سہارے نے گنہ گار کیا

  • شیئر کیجیے

مجھ کو معلوم ہے انجام محبت کیا ہے

ایک دن موت کی امید پہ جینا ہوگا

  • شیئر کیجیے

دن بھی ہے رات بھی ہے صبح بھی ہے شام بھی ہے

اتنے وقتوں میں کوئی وقت ملاقات بھی ہے

  • شیئر کیجیے

کتاب 1

جلوۂ داغ

 

1950

 

تصویری شاعری 4

اپنی سی کرو تم بھی اپنی سی کریں ہم بھی کچھ تم نے بھی ٹھانی ہے کچھ ہم نے بھی ٹھانی ہے

اپنی سی کرو تم بھی اپنی سی کریں ہم بھی کچھ تم نے بھی ٹھانی ہے کچھ ہم نے بھی ٹھانی ہے

کسی سے آج کا وعدہ کسی سے کل کا وعدہ ہے زمانے کو لگا رکھا ہے اس امیدواری میں

اپنی سی کرو تم بھی اپنی سی کریں ہم بھی کچھ تم نے بھی ٹھانی ہے کچھ ہم نے بھی ٹھانی ہے

 

متعلقہ شعرا

  • جوشؔ ملیح آبادی جوشؔ ملیح آبادی ہم عصر

"پٹنہ" کے مزید شعرا

  • شاد عظیم آبادی شاد عظیم آبادی
  • کلیم عاجز کلیم عاجز
  • حسن نعیم حسن نعیم
  • سلطان اختر سلطان اختر
  • حسرتؔ عظیم آبادی حسرتؔ عظیم آبادی
  • خورشید اکبر خورشید اکبر
  • بسمل  عظیم آبادی بسمل  عظیم آبادی
  • منیر سیفی منیر سیفی
  • امداد امام اثرؔ امداد امام اثرؔ
  • عالم خورشید عالم خورشید