Aziz Warsi's Photo'

عزیز وارثی

1924 - 1989 | دلی, ہندوستان

غزل 38

اشعار 13

دل میں اب کچھ بھی نہیں ان کی محبت کے سوا

سب فسانے ہیں حقیقت میں حقیقت کے سوا

کیسے ممکن ہے کہ ہم دونوں بچھڑ جائیں گے

اتنی گہرائی سے ہر بات کو سوچا نہ کرو

تمہاری ذات سے منسوب ہے دیوانگی میری

تمہیں سے اب مری دیوانگی دیکھی نہیں جاتی

  • شیئر کیجیے

غم عقبیٰ غم دوراں غم ہستی کی قسم

اور بھی غم ہیں زمانے میں محبت کے سوا

تم پہ الزام نہ آ جائے سفر میں کوئی

راستہ کتنا ہی دشوار ہو ٹھہرا نہ کرو

کتاب 11

عزیز وارثی

 

 

غزلیات عزیز

 

2000

حدیث معرفت

 

1967

جہان عزیز

عزیز وارثی

2005

جسارت

 

1976

کلیات عزیز

 

1993

محراب

 

1976

سفینہ و ساحل

 

1951

سفینہ و ساحل

 

1962

سفینہ و ساحل

 

1962

آڈیو 7

اس نے مرے مرنے کے لیے آج دعا کی

تری تلاش میں نکلے ہیں تیرے دیوانے

جہاں میں ہم جسے بھی پیار کے قابل سمجھتے ہیں

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

"دلی" کے مزید شعرا

  • شیخ ظہور الدین حاتم شیخ ظہور الدین حاتم
  • فرحت احساس فرحت احساس
  • داغؔ دہلوی داغؔ دہلوی
  • بیخود دہلوی بیخود دہلوی
  • آبرو شاہ مبارک آبرو شاہ مبارک
  • شیخ ابراہیم ذوقؔ شیخ ابراہیم ذوقؔ
  • شاہ نصیر شاہ نصیر
  • حسرتؔ موہانی حسرتؔ موہانی
  • تاباں عبد الحی تاباں عبد الحی
  • مظہر امام مظہر امام